انڈونیشیا سونامی (سمندری طوفان)

مورخہ 26 دسمبر 2004ء کو ساؤتھ ایشیاء میں آنے والے زلزلے اور سونامی نے انڈونیشیاء، سری لنکا اور تھائی لینڈ سمیت دنیا کے 12 اہم ممالک کو اپنی تباہ کاریوں کی لپیٹ میں لے لیا جس کے نتیجے میں ہزاروں دیہات صفحہ ہستی سے مٹ گئے ان گنت شہر تباہ ہوئے۔ بڑی بڑی مضبوط عمارات منہدم ہو گئیں لاکھوں لوگ لقمہ اجل بنے کئی ملین افراد بے گھر اور بے آسرا ہو گئے۔ ان مصیبت زدہ اور تباہ حال لوگوں کے علاج معالجے، خوراک، رہائش اور نئے سرے سے بحالی میں مدد کے لیے پوری دنیا میں سرکاری وغیر سرکاری اور انفرادی واجتماعی سطح پر مختلف تنظیموں نے بھرپور طریقے سے فنڈز جمع کرنے کے لیے مہمات چلائیں وہاں منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن بھی اس کاوش میں کسی دوسری ویلفیئر تنظیم سے پیچھے نہیں رہی۔

منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن نے سونامی سے متاثرہ افراد کی بحالی کے لیے انڈونیشیاء کے صوبہ بند اچے میں اپنی خدمات سرانجام دیں۔ منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن نے آچے کے متاثرہ علاقوں میں امدادی پیکج کے لیے فیز - 1 کے طور پر ایمرجنسی ریلیف ایڈ اور مسجد "رحمت اللہ" کی مرمت کے علاوہ جو خدمات سرانجام دیں وہ درج ذیل ہیں۔

  1. مکانات کی تعمیر
  2. فشنگ بوٹس کی فراہمی
  3. 120 خاندانوں کو روزگار کی فراہمی
  4. واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ کی فراہمی
  5. آچے کے یتیم بچوں کے لیے منہاج یونیورسٹی لاہور (پاکستان) میں سکالرشپ
  6. اس منصوبے پر ایک لاکھ امریکن ڈالر خرچ ہوئے۔

Indonesian Tsunami