منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن کے زیراہتمام 24 شادیوں کی سالانہ اجتماعی تقریب

منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن کے زیراہتمام شادیوں کی 8ویں سالانہ اجتماعی تقریب میں 3 مسیحی اور 21 مسلمان جوڑے شادی کے مقدس رشتہ میں بندھ گئے۔ یہ تقریب یکم اپریل 2012 کو منہاج یونیورسٹی (بغداد ٹاؤن لاہور) کے گراؤنڈ میں منعقد ہوئی۔ منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن کی طرف سے ہر دلہن کو ڈیڑھ لاکھ روپے مالیت کا گھریلو سامان اور جیولری سیٹ تحفے میں دیا گیا۔ 1500 مہمانوں کیلئے کھانے کا انتظام تھا۔

تقریب کے مہمان خصوصی گورنر پنجاب لطیف کھوسہ نے کہا کہ شیخ الاسلام ڈاکٹر طاہر القادری کی مذہبی، تعلیمی اور فلاحی خدمات دوسری جماعتوں اور تنظیموں کیلئے قابل تقلید ہے۔ محترمہ بینظیر بھٹو شہید تحریک منہاج القرآن کی لائف ممبر تھیں وہ ڈاکٹر طاہر القادری کے ویژن سے بہت متاثر تھیں۔ بانی تحریک منہاج القرآن امن و سلامتی کے حقیقی سفیر ہیں۔ انہوں نے نفرتوں کو محبتوں سے بدلنے کا جو مشن شروع کیا ہے وہ پوری دنیا میں انہیں ممتاز کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر طاہر القادری نے مشرف کی آمریت کے خلاف استعفیٰ دے کر جمہوریت کو نئی زندگی بخشی۔ انتہا پسندی اور دہشت گردی جیسے فتنے کے خلاف ڈاکٹر طاہر القادری نے فکری، علمی اور عملی جہاد کر کے انسانیت کو اسلام کی حقیقی تعلیمات تک رسائی دی ہے اور اسلام اور پاکستان کے خلاف گھناؤنی سازشوں کو ناکام بنا دیا ہے اس لئے ڈاکٹر طاہر القادری کی شخصیت عالم اسلام اور پاکستان کیلئے قابل فخر ہے۔ گورنر پنجاب نے کہا کہ جہیز غیر اسلامی ہے حکومت قانون سازی کے ذریعے اس کلچر کو ختم کرنے میں اہم کردار ادا کرے گی۔

گورنر پنجاب لطیف کھوسہ اور دیگر رہنماؤں نے نو بیاہتاجوڑوں کے ساتھ گروپ فوٹو بنوائے اور ان میں تحائف تقسیم کئے۔ اس مو قع پر منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن ہالینڈ کے صدر ڈاکٹر عابد عزیز اور پیرس کے رہنماء حافظ اقبال اعظم، سہیل محمود بٹ، نون لیگ کے ایم پی اے سیف الملوک، امیر تحریک مسکین فیض الرحمن درانی، جی ایم ملک، احمد نواز انجم، ڈاکٹر عبید اللہ رانجھا، ڈاکٹر مرتضیٰ علوی، ساجد محمود بھٹی، جواد حامد اور تحریک منہاج القرآن کے دیگر قائدین بھی موجود تھے۔ منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن کے ڈائریکٹر سید افتخار شاہ بخاری نے استقبالیہ کلمات کہے اور منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن کی سالانہ رپورٹ پیش کی۔

ناظم اعلیٰ ڈاکٹر رحیق احمد عباسی نے کہا کہ ہر فرد دوسروں کو خوشیاں بانٹنے کا عظیم کام ضرور کرے۔ کیونکہ غربت، جہالت اور پسماندگی کا خاتمہ کرنا سنت رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ہے۔ شیخ الاسلام ڈاکٹر طاہر القادری نے بے سہارا اور یتیم بچوں کے منصوبے آغوش سمیت دیگر فلاحی اور تعلیمی منصوبوں کو دوسروں کیلئے مثال بنا دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے ملکی حالات ایسے ہو گئے ہیں کہ عوام خوشیوں کو ترس گئے ہیں ایسے حالات میں غریب گھرانوں کی بچیوں کے ہاتھ پیلے ہونا کسی نعمت سے کم نہیں۔ منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن ’’ہے زندگی کا مقصد اوروں کے کام آنا‘‘ کے شعور کو عام کر رہی ہے۔

شادیوں کی اجتماعی تقریب میں ہر جوڑے کا الگ الگ نکاح پڑھایا گیا اس کیلئے مسیحی اور مسلم مذہبی رہنماء موجود تھے۔ اجتماعی نکاح کا خطبہ اور دعا مرکزی امیر تحریک منہاج القرآن مسکین فیض الرحمن درانی نے کرائی۔