منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن فیصل آباد کی سیلاب متاثرین کے لیے امدادی سرگرمیاں

پاکستان میں موجودہ سیلاب کی تباہ حالیوں نے سابقہ تمام ریکارڈ توڑ دیئے ہیں، تقریباً دو کروڑ افراد اس سے متاثر ہوئے ہیں، ان علاقوں میں متاثرہ لوگوں کی بحالی کے لیے منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن فیصل آباد کی امدادی سرگرمیاں بلاناغہ جاری ہیں۔ منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن کی طرف سے متاثرین سیلاب کے لیے ایک کروڑ بیس لاکھ مالیت کے امدادی سامان کے 29 ٹرک مظفر گڑھ، لیہ، کروڑ، روجھان، کوٹ سلطان، جھنگ، کروڑ لعل عیسن اور راجن پور میں پہنچا دیئے گئے ہیں جس کی نگرانی ناظم تحریک منہاج القرآن فیصل آباد انجینئر محمد رفیق نجم کر رہے ہیں۔ فیصل آباد میں 80 کیمپ لگائے گئے ہیں، مرکزی کیمپ دارالعلوم نوریہ رضویہ گلبرگ اے میں قائم کیاگیا ہے۔

تحریک منہاج القرآن فیصل آباد کے ضلعی امیر سید ہدایت رسول قادری نے میڈیا کو امدادی سامان کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ متاثرین کے لیے بھیجے گئے امدادی سامان کے 29 ٹرکوں میں خیمے، بستر، کمبل، کپڑے، آٹا، چینی، چاول، ادویات، دالیں، اچار، چنے، بچوں کے لیے دودھ، مرچ، مصالحہ جات، چائے کی پتی، برتن، پانی کی بوتلیں، جگ و گلاس و دیگر ضروریات زندگی کا سامان شامل ہے۔ منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن فیصل آباد کے ہزاروں کارکنان سیلاب سے متاثرین کے لیے دن رات ایک کرکے ان کی بحالی کے لیے مصروف ہیں۔ اس موقع پر نائب امیر حاجی امین القادری، نائب ناظم رانا غضنفر علی، ناظم دعوت خالد محمود رندھاوا، ناظم تربیت پروفیسر محمد عارف صدیقی، ناظم ممبر شپ پروفیسر غلام مرتضیٰ، ناظم امور خواتین اللہ رکھا نعیم القادری، ناظم مالیات پروفیسر ارشد اقبال، ناظم نشرواشاعت غلام محمد قادری، صدر MSM محمد عرفان آصف، امیر علماء کونسل علامہ عزیزالحسن حسنی اور صدر یوتھ رانا ناصر نوید موجود تھے۔

انہوں نے کہا کہ تحریک منہاج القرآن صوبائی حلقہ 62 کے صدر رانا کرامت علی نے حج پر جانے کا پروگرام منسوخ کرتے ہوئے حج کی ساری رقم سیلاب زدگا ن کے لیے جمع کروادی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مشکل کی اس گھڑی میں ہم اپنے بہن بھائیوں، بزرگوں اور بچوں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے اور اپنی بساط کے مطابق امدادی سرگرمیوں کو اس وقت تک جاری رکھیں گے جب تک سیلاب آفت سے نجات نہیں مل جاتی۔